آل رائونڈر عبدلرزاق کی قومی ٹیم میں واپسی؟

پاکستانی آل راؤنڈر عبدالرزاق کے مداحوں آج بھی یہ مطالبہ کرتے ہیں کہ انہیں قومی کرکٹ ٹیم میں واپس لایا جائے۔ اور یہ مطالبہ کریں بھی کیوں نا! وہ آل راؤنڈر ہی زبردست تھے کہ جب کریز پر آتے تھے تو مخالفین کے پسینے چھوٹ جاتے تھے۔نجی ٹی وی کے پروگرام میں وسیم اکرم نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آج بھی جب عام لوگوں سے ملاقات ہوتی ہے تو وہ کہتے ہیں کہ عمران نذیر اور عبدالرزاق کو ٹیم میں لے کر آئیں حالانکہ دونوں نے بہت پہلے انٹرنیشنل کیرئیر کا آغا زکیا تھا لیکن اب تک لوگ انہیں ٹیم میں دیکھنے کے خواہشمند ہیں۔ابھی کیرئیر کے آغاز سے متعلق گفتگو چل ہی رہی تھی کہ راشد لطیف نے کہا کہ عبدالرزاق نے 1998ءمیں ڈیبیو کیا تھا جس پر ساتھ بیٹھے شعیب اختر نے ہنستے ہوئے کہا کہ رزاق نے تو 74 میں ڈیبیو کیا تھا، اس پر وسیم اکرم نے کہا کہ یہاں عبدالرزاق کی بات ہو رہی ہے تو شعیب اختر نے بھی برجستہ جواب دیا کہ ”میں کیڑا حاجی رزاق کی گل کر ریاواں۔“ (میں کون سا حاجی عبدالرزاق کی بات کر رہا ہوں)شعیب اختر کے اس برجستہ جواب پر وسیم اکرم، ثقلین مشتاق، راشد لطیف اور پروگرام کے میزبان پر ہنسی کا ایسا ’دورہ‘ پڑا کہ فوراً بریک لینا پڑ گئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں