سی پیک سے متعلق کچھ لوگوں کو غلط فہمی تھی سی پیک پاکستان کا منصوبہ ہے،آصف علی زرداری

جعفرآباد (مانیٹرنگ ڈیسک) سابق صدر اور پاکستان پپیلز پارٹی (پی پی پی) کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ سی پیک سے متعلق کچھ لوگوں کو غلط فہمی تھی،حکمرانوں کو سمجھ نہیں آرہی کہ سی پیک پاکستان کا منصوبہ ہے،سی پیک پر بلوچستان سمیت پورے پاکستان کا حق ہے بلوچستان کے شہر جعفرآباد میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے آصف علی زرداری نے کہا کہ سی پیک پر کچھ لوگوں کو غلط فہمیاں ہورہی ہیں، ‘یہ پختونوں اور پاکستان کے لیے ہے، ذاتی منصوبوں کے لیے نہیں، لیکن اب سوچنا یہ ہے کہ ہم اْن سے کیسے اپنی چیزیں واپس لیں، ہم نے اْن سے اپنی ساری زمینیں واپس لینی ہیں، بلوچوں سے بانٹنی ہیں، بلوچوں کو دینی ہیں، لیکن زور آوری سے نہیں’۔انھوں نے کہا کہ ‘میں نے گذشتہ دنوں حب کے دورے کے وقت بھی کہا تھا کہ مردم شماری کے سلسلے میں بلوچوں کے ساتھ زیادتی ہورہی ہے، اگر زیادتی ہوئی تو پہلے تو جوان پہاڑوں پر چڑھے ہوئے ہیں، پھر ہم بوڑھے بھی چڑھ جائیں گے’۔آصف علی زرداری نے سوال کیا کہ ‘بلوچستان میں پہاڑوں پر چڑھ کر ہم نے کس کا نقصان کیا؟’ ساتھ ہی انھوں نے جواب دیا کہ ‘ہمارا ہی نقصان ہوا، ہمارے بھائی، بیٹے، بھتیجے اور بزرگ مارے گئے اور قومیں تباہ ہوگئیں، وہ قومیں جنھیں ہم فخر سے دیکھا کرتے تھے’ سابق صدر نے بلوچوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ کا علاقہ ملک کا سب سے بڑا علاقہ ہے، لیکن آپ اپنے آپ کو کیوں غلط استعمال ہونے دیتے ہیںان کا کہنا تھا، ‘آپ کے پاس ہر چیز موجود ہے، اس کے علاوہ آپ کی زمین پاکستان کی سب سے زیادہ زرخیز زمین ہے، صرف پانی کا استعمال صحیح کرنا ہے، اگر مجھے اللہ نے موقع دیا تو ساری کچی کینالیں پکی کی جائیں گی اور آپ کو نئے انداز سے پانی چلانا سکھائیں گے اور مفت میں ڈرپ ایریگیشن بھی دیںگے ہندوستانی وزیراعظم نریندر مودی کی جانب سے پاکستان کا پانی بند کرنے کی دھمکی کے حوالے سے زرداری نے کہا کہ ‘میں انھیں بتانا چاہتا ہوں کہ آپ پانی بند نہیں کرسکتے کیونکہ ہم نے اور بہت سے راستے ڈھونڈ لیے ہیں اور ان راستوں میں بلوچستان کا اول حصہ بنتا ہے’۔کشمیر میں بھارتی ظلم و زیادتی اور ہندوستان میں مسلمانوں کے ساتھ سلوک پر بات کرتے ہوئے زرداری کا کہنا تھا کہ دوستوں کو گمراہ کیا جارہا ہے، ‘ذرا انٹرنیٹ پر دیکھیں کہ ہندوستان میں مسلمانوں کے ساتھ کیا سلوک ہورہا ہے، کیا ہم نے بھی بیل کاٹنے پر پھانسی کی سزا لینی ہے؟’۔شریک چیئرمین پی پی نے کہا کہ بلوچستان سے اتنا پیارہے جتنا پاکستان سے پیار ہے،مجھے پہچان سندھ سے ملی شمار بلوچوں میں ہوتا ہے،دوستوں سے کہتا ہوں کہ ان کے پیار کے بغیر کچھ بھی نہیں ہوں،بلوچستان کا مستقبل روشن ہے اور ترقی کے بڑے مواقع ہیں.