پانامہ کیس سے ہٹنے کے لیے کن کن شخصیات کو پیسوں کی آفر کی گئی؟ غلام حسین نے بتا دیا

نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے معروف صحافی غلام حسین کا کہنا تھا کہ پانامہ کیس ایک سال قبل شروع ہوا جب پانامہ پیپرز باہر آئے اور اس کے بعد کئی ممالک کی حکومتیں گرگئیں۔ انہوں نے کہا کہ پانامہ کیس کا فیصلہ جلد ہی متوقع ہے اور ممکنہ طور پر اس فیصلے کے سنائے جانے کے وقت وزیراعظم نواز شریف ملک میں نہیں ہوں گے۔ فیصلہ سنائے جانے کے وقت وزیر اعظم بیرون ملک دورے پر ہوں گے ۔ ان کا کہنا تھا کہ پانامہ کیس میں وزیر اعظم اور ان کے بچوں کا پلڑا اس حد تک کمزور ہے ، انہیں معلوم ہے کہ یہ بری طرح گر چکے ہیں۔اسی لیے انہوں نے اس کیس میں مرکزی پیٹشنرز سراج الحق ، شیخ رشید اور عمران خا ن کو دس دس ارب روپے کی پیشکش کر چکے ہیں کہ وہ کیس سے ہٹ جائیں۔ اس کو دیکھتے ہوئے لگتا ہے کہ ان میں کوئی شرم حیا رہ ہی نہیں گئی۔ غلام حسین نے مزید کیا کہا آپ بھی ملاحظہ کیجئیے:

اپنا تبصرہ بھیجیں