چئیرمین سینیٹ رضا ربانی سے استعفیٰ کا اشارہ دے دیا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)چیئرمین سینٹ میاں رضا ربانی نے وقفہ سوالات کے دوران متعلقہ وزراء کی عدم موجودگی کے باعث وزراء کی آمد تک اجلاس ملتوی کردیا جبکہ وارننگ دی ہے کہ وقفہ سوالات میں ارکان کے سوالات کے درست اور بروقت جوابات فراہم نہ کئے گئے تو ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ جمعہ کو سینٹ میں وقفہ سوالات کے دوران ایوی ایشن ڈویژن سے متعلقہ سوالات وزیر پارلیمانی امور شیخ آفتاب احمد کی درخواست پر پہلے لئے گئے جس کے بعد کیڈ سے متعلقہ سوالات ایجنڈے پر تھے تاہم وزیر مملکت برائے کیڈ ڈاکٹر طارق فضل چوہدری نے چیئرمین کو بتایا کہ کیڈ ڈویژن کے بعض سوالات وزارت داخلہ و انسداد منشیات کو منتقل کئے ہیں کیونکہ یہ کیڈ سے متعلقہ نہیں ہیں۔ چیئرمین نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ متعلقہ وزراء ایوان میں موجود نہیں ہیں جو ارکان کے سوالات کے جوابات دے سکیں۔ اس کے بعد انہوں نے اجلاس کچھ وقت کے لئے ملتوی کردیا۔اس کے بعد وہ غصے کی حالت میں اٹھے اور کہا کہ وہ استعفے پر غور کر رہے ہیں۔ اب اطلاعات آرہی ہیںکہ انھوں نے کہا ہے کہ مجھ تک کوئی درخواست نہ لائی جائے۔میں اب چئیرمین سینیٹ نہیں ہوں۔ انھوں نے دورہ ایران بھی منسوخ کردیا۔ ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت نے میاں رضا ربانی کو منانے کی کوششیں تیز کردی ہیں۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں