عمران خان کا پانامہ کیس میں حکومت کی جانب سے 10ارب روپے کی پیشکش کیے جانے کا انکشاف

پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان تحریک انصاف کے چئیرمین عمران خان کا کہنا ہے کہ وفاقی حکومت نے ان کو پانامہ لیکس کیس میں خاموش رہنے کےلئے 10ارب روپے کی پیشکش کی۔ شوکت خانم ہسپتال کے دورے کے بعد کارکنوں اور پارٹی رہنمائوں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ پانامہ لیکس کیس کی سماعت کے دوران انھیں چپ رہنے کےلئے 10 ارب روپے کی پیشکش کی گئی۔ انھوں نے مزید کہا کہ اب لوگوں کو خود اندازہ ہو جانا چاہیے کہ صرف ایک شخص کو اتنی خطیر رقم کی پیشکش کی گئی ہے تو پانامہ لیکس کیس کی تحقیقات کرنے والی ٹیم کو کیا پیشکش کی گئی ہو گی۔ انھوں نے کہا کہ اب تحریک انصاف نواز شریف پر استعفے کےلئے اپنا دبائو بڑھائے گی۔نواز شریف نے پانامہ لیکس کیس میں اپنی صفائی میں جو شواہد پیش کیے وہ جھوٹ کا پلندہ نکلے۔ اور خود نواز شریف کے کارکنوں کو بھی اپنے لیڈر کا اصلی چہرہ نظر آگیا۔انھوں نے کہا کہ حکومت کے زیر اثر اداروں کے عہدیداران پر مشتمل جوائنٹ انوسٹی گیشن ٹیم سے آزادانہ اور منصفانہ فیصلے کی توقع نہیں کی جا سکتی ۔ اس لیے انھیں نواز شریف کو تحفظ فراہم کرنے سے روکنا ہوگا ۔