ہسپتال میں خاتون کو بچہ جنم دینے کے بعد زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک)ہسپتال میں بچے کو جنم دینے کے فوری بعد نوجوان لڑکی کے ساتھ ایسی شرمناک حرکت کہ انسانیت شرماجائےبھارت میں خواتین کی عصمت دری کے واقعات میں ہر آنے والے دن کے ساتھ خوفناک اضافہ ہو رہا ہے لیکن مزید شرمناک بات یہ ہے کہ ہر نیا واقعہ پہلے سے کہیں زیادہ بھیانک ثابت ہوتا ہے۔ ریاست ہریانہ کے گرگاؤں شہر کے ایک ہسپتال میں بھی جنسی درندگی کا ایسا واقعہ پیش آیا ہے کہ جس نے حیوانیت کی نئی مثال قائم کردی ہے۔ ”این ڈی ٹی وی“ کے مطابق برہم شکتی سنجیوانی ہسپتال کے انتہائی نگہداشت وارڈ میں ایک نوجوان لڑکی کو اس وقت جنسی درندگی کا نشانہ بنادیا گیا جب وہ بچے کو جنم دینے کے بعدابھی پوری طرح ہوش میں بھی نہیں آئی تھی۔ اس لڑکی کے ہاں بچے کی ولادت آپریشن کے ذریعے ہوئی تھی اور اسے ابھی انتہائی نگہداشت وارڈ میں ہی رکھا گیا تھا۔ ہسپتال کے سی سی ٹی وی کیمروں کی ریکارڈنگ میں دیکھا جاسکتا ہے کہ رات تقریباً ساڑھے تین بجے ایک شخص انتہائی نگہداشت وارڈ میں آیا اور لڑکی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بناکر فرار ہوگیا۔ تصویر میں ظر آنے والا شخص آتے یا جاتے ہوئے کسی پریشانی کا شکار نظر نہیں آتا اور نہ ہی کوئی اسے روکنے یا پکڑنے والا نظر آتا ہے۔لڑکی کے گھر والوں کا کہنا ہے کہ اسے انتہائی نگہداشت وارڈ میں داخل کرنے کے بعد ہسپتال انتظامیہ نے انہیں وارڈ سے باہر رکھا تھا اور وہ یہ سمجھ کر مطمئن تھے کہ ان کی بیٹی ایک بڑے ہسپتال میں محفوظ ہے۔ ملزم کی سی سی ٹی وی ریکارڈنگ سامنے آنے کے باوجود پولیس تاحال اس کا سراغ لگانے میں ناکام ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں