بغیر تحقیقات کے کسی کارروائی سے ہم قابل پائلٹس سے ہاتھ دھو بیٹھیں گے، کلثوم پروین

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک ) پاکستان مسلم لیگ(ن) کی سینیٹر کلثوم پروین نے کہا ہے کہ سینئرپائلٹ عامر ہاشمی کا دوران پرواز سونے کے معاملے کو سینٹ کی قائمہ کمیٹی برائے کابینہ ڈویژن میں اٹھایا جائے گا پائلٹ بھی انسان ہے طبعیت خراب ہو سکتی ہے اور ایک جہاز میں دو پائلٹ ہوتے ہیں ایک آرام کرتا ہے اور دوسرا جہاز چلاتا ہے معاملے کی تحقیقات کے بغیر کوئی کارروائی نہیں کی جانی چاہئے اگر کوئی کارروائی کی گئی تو ہم اس طرح کے قابل ترین پائلٹس سے ہاتھ دو بیٹھیں گے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پارلیمنٹ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ پائلٹ عامر ہاشمی سینئر پائلٹ ہیں اور ہرجہاز میں دو پائلٹ ہوتے ہیں ایک آرام کرتا ہے اور دوسرا جہاز چلاتا ہے اسلام آباد سے لندن کا سفر بہت لمبا ہے اور پائلٹ بھی انسان ہیں ان کو بھی نیند آ سکتی ہے اور طبیعت بھی خراب ہو سکتی ہے جہاز میں سونے کے اس معاملے کی تحقیقات ہونی چاہئیں بغیر تحقیقات کے کوئی کارروائی کی گئی تو ہم اس طرح کے سینئر پائلٹ سے ہاتھ دو بیٹھیں گے ہم نے اس معاملے کو 16 تاریخ کو ہونے والی سینٹ کی قائمہ کمیٹی میں اٹھانے کا فیصلہ کیا ہے واضح رہے پائلٹ عامر ہاشمی 26 اپریل کو اسلام آباد سے لندن جانے والی پرواز پی کے 785 میں سوئے پائے گئے تھے اور انہو ںنے جہاز زیر تربیت پائلٹ کے حوالے کر دیا تھا دوران پرواز مسافر نے چیف پائلٹ سے سونے کی شکایت کی جس کے بعد عامر ہاسمی کے خلاف تحقیقات جاری یں اس پر سینیٹر کلثوم پروین نے اس معاملے کو قائمہ کمیٹی میں اٹھانے کا فیصلہ کیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں