عمرہ ادائیگی کے دوران شریف فیملی نے فوٹوگرافی کےلئے کس ملک کی مہنگی ترین کمپنی کوہائر کیا ‘حیران کن خبرآگئی

.پچھلے دو دونوں سے آپ نے دیکھا ہو گا کہ ہمارے وزیراعظم نوازشریف بمعہ اہل و عیال عمرہ کی ادائیگی کے لیے مکہ مکرمہ گئے تو ان کی جو تصاویر جاری کی گئی ہیں اس کا ٹھیکہ مڈل ایسٹ کی ایک مشہور امیج بلڈنگ کمپنی کو دیا گیا تھا۔ اور اگر آپ ان تصاویر کا جائزہ بھی لیں تو آپ کو اندازہ ہو گا کہ یہ تصاویر کسی مہنگے کیمرے کے ساتھ، بھرپور لائٹنگ اور مکمل طور پر کوریوگراف کر کے کھینچی گئی ہیں۔ یہ ویسی تصویریں نہیں ہیں کسی نے عام کیمرے سے کھینچ کر ٹوئیٹر پر لگا دیں۔ ہرگز نہیں!! بلکہ ایک بڑی کمپنی ہائر کرنے کا مطلب ہی یہی تھا کہ ان تصویروں سے میاں صاحب کی ”اللہ رسول شخصیت” کو اجاگر کیا جائے اور پاکستان کی سادہ لوح عوام کو پھر سے بےوقوف بنایا جا سکے.میاں نوازشریف پاکستان کی تاریخ کے سب سے بڑے مالیاتی سکینڈل میں ملوث ہیں اور ایک سال گزر جانے کے بعد بھی وہ آج تک اپنی دولت، کاروبار یا جائیداد کا کوئی ایسا دستاویزی ثبوت پیش نہیں کر سکے جس سے وہ یہ ثابت کر سکیں کہ ان کے ذرائع آمدن ان کے اثاثوں سے بڑھ کر ہیں۔ جب سپریم کورٹ، اپوزیشن اور عوام نے گھیراؤ کیا تو ان کی شخصیت بہت ہی زیادہ داغدار ہو چکی تھی۔ پاکستان کے طول و عرض میں نوازشریف اور ان کے خاندان پر لطیفے بنائے جانے لگے۔ اسی ساری صورتحال کو بہتر کرنے کے لیے میاں صاب نے ”امیچ بلڈنگ” کا سہارا لیا اور اب وہ پھر سے اپنا امیج بہتر کرنے میں کوشاں ہیں۔ اب یہ عوام پر منحصر ہے کہ کیا وہ نوازشریف ان کی شاطر صاحبزادی کے جھانسے میں آتے ہیں یا احتساب کے مطالبے اور تمام پیسہ/جائیددیں/کاروبار ضبط ہو جانے تک ان کا پیچھا کرتے رہیں گے ؟.اس کالم میں ان کی عبادات پر کوئی طنز نہیں کیا گیا، محض یہ باور کروانا تھا کہ وہ ان عبادات کو مقاماتِ مقدسہ کو اپنی ”امیج بلڈنگ” کے لیے کیسے استعمال کر رہے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں