معروف صحافی اینکر کاشف عباسی نے صحافی مہر بخاری سے شادی کو کون سی بد ترین چیز قرار دےدیا؟؟چونکا دینے والی خبر

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) کاشف عباسی اور مہربخاری پاکستانی میڈیا کے دو بڑے نام ہیں۔دونوں ہی نجی نیوز چینلز پر اپنے تیز و تند اور سخت سوالوں اور تبصروں کی وجہ سے خاص شہرت رکھتے ہیں ۔یہ بات تو خیر بہت سارے لوگوں کو معلوم ہے کہ دونوں انتہائی مشہور اور قابل صحافی آپس میں میاں بیوی بھی ہیں ۔لیکن آپس کے ازدواجی رشتے کے بارے میں ان کی رائے کیسی ہے؟ یہ شاید ہی کسی کو معلوم ہو۔پیشہ ورانہ امور کی انجام دہی کرنے والے اپنی نجی زندگی کو سرعام زیر بحث لانے سے کتراتے ہیں ۔شاید ایسا کرنا ضروری بھی نہیں ہے لیکن یہ پروگرام ہی ہیں جن کے دلچسپ و عجیب سیگمنٹ بسا اوقات ایسے قریبی رشتوں کو کچھ اس طرح آمنے سامنے لا کھڑا کرتے ہیں کہ وہ اپنی ذاتی زندگی کے بارے میں ہلکے پھلے اور مذاحیہ انداز میں کچھ نہ کچھ اگل ہی دیتے ہیں ۔ایسا ہی کچھ نجی ٹی وی پروگرام کے دوران مہربخاری کے ساتھ ہوا جو اپنے خاوند کو پروگرا م میں ایک مہمان کی حیثیت سے بٹھا کر ان سے کثیر الانتخاب سوالات پوچھ کر یک لفظی جواب پوچھ رہی تھیں۔ یعنی وہ دو آپشنز بتا رہی تھیں جن میں سے کاشف عباسی نے اپنی پسند یدہ آپشن کا انتخاب کرنا تھا۔یا مختصر ترین جواب دینا تھا۔ مہربخاری نے اپنے خاوند کو تیار ہوجانے کی ہدایت دیتے ہوئے پہلا سوال کیا۔”کامران خان یا شاہ زیب خانزادہ؟”جواب آیا “شاہ زیب “۔ سوال کیا گیا کہ “ڈاکٹر شاہد مسعود یا عاصمہ شیرازی؟”۔ جواب آیا “ڈاکٹر شاہد مسعود”۔ اور پھر سوال کیا گیا”زندگی کا سب سے زیادہ ڈراؤنا خواب ؟”۔ اس پر کاشف عباسی نے ایک لمحے کےلئے سوچنے کے بعد جواب دیا©”وہ تو پورا بھی ہو گیا بھئی”۔اور یہ کہتے ہی انھوں نے زوردار قہقہہ مارا ۔ اس دوران مہر بخاری یہ کہتی رہ گئیں کہ ایڈیٹر صاحب اس لائن کو ایڈیٹ کروانا ہے میں نے ۔لیکن ان کا یہ مطالبہ کاشف عباسی کے قہقہوں کے نیچے ہی دب کر رہ گیا۔