(ن) لیگ کے 35 اراکین اسمبلی جلد پارٹی چھوڑ جائیں گے،شیخ رشید کا دعویٰ

عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے دعویٰ کیا ہے کہ مسلم لیگ (ن) کے 35 اراکین اسمبلی جلد پارٹی چھوڑ جائیں گے، جمشید دستی کی طرح موجودہ حکمران بھی کل کلاں جیل میں ان حالات کا سامنا کر سکتے ہیں ، پی ٹی آئی میں فی الحال شامل نہیں ہو رہا ، عوامی مسلم لیگ اور پی ٹی آئی کا انتخابی اتحاد ہو سکتا ہے ، کوئٹہ میں پولیس سارجنٹ کو کچلنے والے رکن صوبائی اسمبلی مجید اچکزئی چھترول ہونی چاہیے ۔جمعرات کو ایک نجی ٹی وی کو دیئے گئے انٹرویو میں شیخ رشید احمد نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کے 35 اراکین اسمبلی جلد پارٹی چھوڑ جائیں گے، جمشید دستی کی طرح موجودہ حکمران بھی کل کلاں جیل میں ان حالات کا سامنا کر سکتے ہیں ۔انھوںنے کہاکہ میں نے شادی نہیں کی اسی لیے کرپشن سے بچا ہوا ہوں کیونکہ بیویوں کا کرپشن میں بڑا ہاتھ ہوتا ہے۔ مجھے کوئی مسئلہ نہیں ہے لیکن ٹیکسٹائل مل(شادی) لگانے کا بھی کوئی شوق نہیں ہے، 1988 سے 1989 میں نواز شریف صاحب نے کہا تھا کہ ٹیکسٹائل مل لگا لو لیکن میں نے یہ کام نہیں کیا۔انہوں نے کہا کہ شادی کے حوالے سے میری ماں ہر وقت روتی رہتی تھی لیکن میں نے خاندانی ذمہ داریاں نبھائیں ۔خاندانی ذمہ داریاں نبھانے کیلئے کچھ نہ کچھ قربانی تو دینی ہی پڑتی ہے اور میں نے شادی والی قربانی خوش اسلوبی سے دے دی۔انہوں نے کہا کہ لال حویلی کے نیچے کتابیں بیچا کرتا تھا،۔دل میں شادی نہ کرنے کے حوالے سے کوئی خلش نہیں ہے کیونکہ اللہ نے بہت عزت دی اور بھابھڑہ بازار سے اٹھا کر 7 بار وزیر بنایا ۔شیخ رشید نے کہاکہ پی ٹی آئی میں فی الحال شامل نہیں ہو رہا ، عوامی مسلم لیگ اور پی ٹی آئی کا انتخابی اتحاد ہو سکتا ہے ، کوئٹہ میں پولیس سارجنٹ کو کچلنے والے رکن صوبائی اسمبلی مجید اچکزئی چھترول ہونی چاہیے۔