پانامہ کیس کا تاریخی فیصلہ آئے گا،چوہدری شجاعت

لاہور (ویب ڈیسک) ق لیگ کے سربراہ چودھری شجاعت نے کہا ہے کہ پانامہ کیس کا تاریخی فیصلہ آئے گا، ن لیگ فیصلہ آنے سے پہلے بھی ٹوٹ سکتی ہے۔ کوئی این آر او ہونے نہیں جا رہا۔ انہوں نے مزید کہا کہ سپریم کورٹ پانامہ پر فیصلہ دے گی اور ساتھ ہی گائیڈ لائن بھی دے گا کہ ملک کیسے چلے گا۔ ن کے علاوہ تمام سیاسی جماعتوں سے اتحاد ہو سکتا ہے۔ ملک کے لئے درد دل رکھنے والی تمام جماعتیں ن لیگ کیخلاف متحد ہو جائیں گی۔ شہباز شریف کا بیان کہ سانحہ بہاولپور جہالت کے باعث پیش آیا افسوسناک ہے دو دہائیوں سے زائد تو یہ خود پنجاب پر قابض رہے ہیں تو جہالت کی وجہ تو یہ خود ہیں۔ساری دنیا میں تعلیم کا محکمہ وفاق کے پاس ہوتا ہے جبکہ یہاں 18 ویں ترمیم کر کے صوبوں کے حوالے کر دیا جس نے تعلیم کا بیڑا غرق کر دیا۔ اب تو آئینی طور پر جماععت قائداعظم کی جگہ شہباز کی تصویر بھی لگا دیں تو کوئی کچھ نہیں کر سکتا۔ چودھری شجاعت نے کہا کہ وزیراعظم کو پہلے پارا چنار جانا چاہئے تھا پھر بہاولپور جاتے۔ جمشید دستی کی گرفتاری اور تشدد کی مذمت کرتے ہیں۔ پانامہ کیس اب عوامی کیس بن چکا ہے اس لئے این آر او نہیں ہو سکتا۔ نوازشریف نااہل قرار پا گئے تو ن لیگ ختم ہو جائے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں