کشمیریوں کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی،سرتاج عزیز

اسلام آباد(نامہ نگار)وزیراعظم نوازشریف کے مشیر برائے امور خارجہ سرتاج عزیز نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر کو نظر انداز کرکے بھارت کے ساتھ بات چیت نہیں ہو گی۔ کشمیر کو ا ٹوٹ انگ کا بھارتی دعوی اگر سچا ہے تو بھارت اقوام متحدہ کی نگرانی میں رائے شماری پر آمادہ ہو، اسے اپنی حیثیت کا پتہ چل جائے گا،کشمیر کے 99 فیصد لوگ پاکستان کے ساتھ جائیں گے بھارت کے حق میں 10 فیصد بھی ووٹ نہیں پڑیں گے، انڈیانے چین کے خلاف اپنی خدمات امریکیوں کوپیش کی ہیں جس پرامریکہ نے صلاح الدین کودہشت گردقراردیاہے مگرکشمیریوں نے اس پرسخت ردعمل دے کربھارت کومشکل میں ڈال دیاہے آزادکشمیروگلگت بلتستان کے عوام کو آئینی ومالیاتی اختیارات دینے کے لیے حکومت اقدامات کررہی ہے کشمیری بہنوں اور بھائیوں کو یقین دلاتے ہیں کہ پاکستان مقبوضہ کشمیر کے حوالے سے اپنے اصولی موقف پر قائم ہے اور کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کی حمایت جاری رکھے گا کیونکہ کشمیر کاز ہر پاکستانی کے دل کی آواز ہے۔ پوری پاکستانی قوم کشمیری بھائیوں کے ساتھ ہے۔ کشمیریوں کی قربانیاں کسی صورت ضائع نہیں جانے دی جائیں گی اور وہ جلد آزادی کی صبح دیکھیں گے۔ مشیر امور خارجہ سرتاج عزیز پیر کے روز دفتر خارجہ میں کشمیر جرنلسٹس فورم کے زیراہتمام کشمیری صحافیوں کو بریفنگ دے رہے تھے۔ انہوں نے کشمیر کی صورت حال ، بھارتی مظالم ، ایل او سی ، گلگت بلتستان ا ور آزاد کشمیر سے متعلق سوالات کے جواب بھی دئیے ۔ اس موقع پر مشیر امور خارجہ کے ہمراہ ترجمان دفتر خارجہ نفیس ذکریا اور ڈائریکٹر جنرل ساؤتھ ایشیا محمد فیصل بھی موجود تھے۔ کشمیر جرنلسٹس فورم کے وفد میں صدر کشمیر جرنلسٹس فورم عابد خورشید ، امجد چوہدری ، سردار زاہد تبسم ، ارشاد محمود ، اعجاز عباسی ، سردار شیراز ، ثمر عباس ، سرفراز راجا ، سردار عاشق حسین ، خاور نواز راجا ، عمر فاروق ، عقیل انجم ، اطہر مسعود وانی ، لطیف ڈار ، اقبال اعوان ، مقدر شاہ ، شامل تھے ۔ سرتاج عزیز نے کہا کہ بین الاقوامی برادری کشمیر کی صورتحال کو سمجھ رہی ہے۔ بین الاقوامی میڈیا اس سے صورتحال کی نشاندہی کر رہا ہے۔ خود بھارتی میڈیا بھی کشمیر کے مظالم کے خلاف آواز بلند کر رہا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں