تین دن قبل نواز شریف نے چوہدری کے کان میں کہا کہ خدا کیلئے مارشل لا لگوا دیں

اسلام آباد (ویب ڈیسک )نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے سینئیر صحافی چوہدری غلام حسین نے کہا کہ نوا ز شریف کی والدہ بھی لندن جا رہی ہیں، جبکہ ان کے داماد کیپٹن ریٹائرڈ صفدر انتہائی خوفزدہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان کی صاحبزادی مریم جو ہیں وہ اپنے والد کو کہتی ہیں کہ آپ نے بڑی حکومت کر لی ہے، اب آپ کو چاہئیے کہ آپ ڈٹ جائیں اور ایسا بندو بست کریں کہ فوج اور ججز کو شکست ہو جائے تاکہ ہم جب دوبارہ حکومت میں آئیں تو کھُل کر جو چاہیں کریں اور پیچھے مڑ مڑ کر نہ دیکھیں۔ان کا کہنا تھا کہ اسی پر اب نواز شریف بھی وہی باتیں کر رہے ہیں۔ تین دن قبل انہوں نے میرے کان میں کہا کہ اس ملک میں مارشل لا لگوا دیں۔ یہ سب ولی اللہ بنے ہوئے ہیں ، انہوں نے عدلیہ اور فورسز کے خلاف گھناؤنی سازش کی۔ انہوں نے احتساب عدالت کے باہر رینجرز کو خود بلایا اور کہا کہ رینجرز عدلیہ کا تحفظ کرے اور بعد ازاں خود ہی واویلا کر دیا۔چوہدری غلام حسین نے کہا کہ ڈی جی رینجرز پنجاب بارڈر پر پھر رہے تھے۔ لیکن یہ چاہتے تھے کہ ڈی جی رینجرز کو طلب کریں اور فارغ کر دیں۔ پھر کسی نے ان کو بتایا کہ ڈی جی رینجرز سیالکوٹ کے بارڈر پر جہاں فائرنگ ہوئی، وہاں دشمن کو دو ٹوک جواب دینے جائیں یا آپ کے سامنے پیش ہو جائیں۔ سینئیر صحافی نے بتایا کہ پاک فوج اس ملک کے سسٹم کو چلانا چاہتی ہے۔ایک اطلاع یہ بھی تھی کہ آرمی چیف نے کابل میں مزید دورہ کرنا تھا لیکن وہ واپس آئے اور کور کمانڈر کانفرنس ہوئی۔انہوں نے کہا کہ کور کمانڈر کانفرنس میں آرمی چیف سے کہا گیا کہ جو بھی جمہوریت کے تحفظ ، قانون کے عملدرآمد اور آئین کی بقا کے لیے کام کریں گے متحدہ طور پر پاک فوج اور قوم ان کے ساتھ ہیں۔ لیکن اگر کوئی پاک فوج پر کیچڑ اچھالے گا تو ہم نہیں چھوڑیں گے۔ اور اگر فوج کو عدالتی حکم پر کوئی بھی اقدامات کرنے پڑیں تو ہم پیچھے نہیں ہٹیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں