تحریک لبیک کا حکومت کو الٹی میٹم، آسیہ کا نام ECL میں نہ ڈالا تو احتجاج کرینگے

کراچی(رپورٹ:مظفر حسین عسکری) تحریک لبیک نے آسیہ ملعونہ کا نام ای سی ایل میں آج پیر تک شامل کرنے اور خادم حسین رضوری سمیت دیگر رہنماوں کے خلاف مقدمات واپس نہ لینے پر انتہائی سخت احتجاج کی دھمکی دے دی کارکنان کو تیار رہنے کی ہدایت اس ضمن میں تحریک لبیک پاکستان کے اہم ذرائع نے آزاد ریاست وکو بتایا ہے کہ حکومت اور تحریک لبیک کے درمیان ہونے والے معاہدے کے باوجود حکومت نے تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ خادم حسین رضوی اور پیر افضل قادری سمیت دیگر مرکزی قائدین کے خلاف مقدمات درج کرنے شروع کردیے ہیں ۔اور انکی گرفتاری کا بھی خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے ذرائع کے مطابق ٹی ایل پی قیادت نے حکومت کے ساتھ جو معاہدہ کیا ہے اسکے مطابق آسیہ ملعونہ کا نام آج پیر تک ایگزیٹ کنٹرول لسٹ میں شامل کرنے اور گرفتار شدہ کارکنوں کی رہائی اور ان پر قائم مقدمات کو واپس لیا جانا تھا۔ تاہم حکومت نے معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ہزاروں کارکنوں اور تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ خادم حسین روی اور دیگر قائدین کے خلاف انسداد دہشت گردی ایکٹ سمیت درجنوں مقدمات درج کردیئے ہیں ذرائع کے مطابق تحریک لبیک پاکستان کے ترجمان پیر اعجاز اشرفی نے اس بات کا غندیہ دیا ہے کہ اگر آج پیر تک آسیہ ملعونہ کا نام ای سی ایل میں نہ ڈالا گیا اور خادم حسین رضوی سمیت دیگر قائدین اور کارکنوں کے خلاف درج مقدمات واپس نہ لیے گئے تو تحریک لبیک پاکستان دوبارہ زیادہ قوت کے ساتھ انتہائی سخت احتجاج شروع کرے گی جسکے لیے کارکنان کو تیار رہنےکی ہدایت جاری کردی گئی ہے۔ واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے احتجاج کے دوران سرکاری اور نجی املاک کو نقصان پہنچانے پر شرپسندی میں مرتکب افراد کو گرفتار کرنے کے احکامات جاری کیے ہیں جس پر وفاقی اور صوبائی حکومتوں نے ملکر ملک بھر میں کریک ڈاون شروع کردیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں