سپريم کورٹ کا کراچی سرکلر ريلوے اور ٹرام لائن کو بحال کرنے کا حکم

کراچی : سپريم کورٹ نے کراچی سرکلر ريلوے اور ٹرام لائن کو فوری بحال کرنے کا حکم دے دیا، عدالت نے ريلوے لائن کو قبضہ مافیا سے کليئر کرانے کی ہدايت کی ہے۔تفصیلات کے مطابق سپريم کورٹ کراچی رجسٹری ميں جسٹس گلزار احمد کی سربراہی ميں اہم اجلاس منعقد ہوا، اجلاس میں عدالت نے حکم دیا کہ کراچی بھر ميں قبضہ کی گئی ريلوے کی زمينوں کو واگزار کروا کر کراچی سرکلر ريلوے کو فوری بحال کیا جائے۔جس پر ڈی ايس ريلوے نے بتایا کہ بيشتر علاقوں ميں ريلوے کی زمينوں پر قبضہ ہے، عدالت نے ڈپٹی کمشنرز کے ذريعے تمام علاقوں سے ريلوے لائن کليئر کرانے کی ہدايت جاری کی۔اس کے علاوہ سپريم کورٹ نے ٹرام لائن کی بحالی کا بھی حکم دیتے ہوئے کہا کہ سياحتی مقاصد کيلئے صدر سے اولڈ سٹی ايريا تک ٹرام چلائی جائے، کےايم سی اور ضلعی انتظاميہ کی مدد سے بوگياں تيار کرنے کی دايت بھی کی۔اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ مقامی انتظاميہ ريلوے کی مدد سے سرکلر ریلوے کے روٹ کا تعين کرے گی۔ سپريم کورٹ نے تجاوزات کيخلاف آپريشن پورے شہرميں تيز کرنے کی ہدايت دیتے ہوئے واضح حکم دیا کہ اب کراچی ميں کوئی تجاوزات نظر نہ آئے۔