ملک کی خاطر قلم کے ساتھ بندوق بھی اٹھا سکتا ہوں، فیصل واوڈا

کراچی: تحریک انصاف کے رہنما اور رکن قومی اسمبلی فیصل واوڈا نے کہا ہے کہ چینی قونصل خانے جانے کا مقصد سیاسی شہرت حاصل کرنا نہیں تھا، ملک کو بچانے کے لیے قلم کے ساتھ بندوق اٹھانا بھی جانتا ہوں۔اے آر وائی کے پروگرام اعتراض ہے میں گفتگو کرتے ہوئے فیصل واوڈا کا کہنا تھا کہ میری بیٹی چینی قونصلیٹ کے قریب واقع اسکول جاتی ہے، انتظامیہ نے سب سے پہلے مجھے فون کر کے بتایا کہ قونصل خانے پر حملہ ہوا اور دھواں اٹھ رہا ہے۔تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی کا کہنا تھا کہ ’چینی قونصلیٹ حملےکی سب سے پہلے اطلاع میرے آئی جس کے بعد میں نے سب کو آگاہ کیا‘۔ اُن کا کہنا تھا کہ ’میں کسی سےڈرتانہیں ہوں اور نہ ہی سیاسی شہرت حاصل کرنے کے لیے قونصل خانے گیا، اپنے ملک کے لیے آگے آیا اور آئندہ بھی پاکستان کو جب میری ضرورت پڑی تو حاضر ہوں گا‘۔ فیصل واوڈا کا کہنا تھا کہ ’ملک کوبچانےکے لیے قلم کےساتھ بندوق بھی اٹھاناجانتاہوں‘۔رکن قومی اسمبلی کا کہنا تھا کہ چینی قونصلیٹ حملے میں شہید ہونے والے پولیس اہلکار ہمارے اصل ہیرو ہیں، انہوں نے اپنی قیمتی جانوں کا نذرانہ پیش کر کے دہشت گردوں کو پسپا کیا اور قانون نافذ کرنے والے اداروں نے بروقت کارروائی کر کے حملے کو ناکام بنایا‘۔یاد رہے کہ دہشت گردوں نے گزشتہ روز صبح 9 بجے کے قریب کراچی میں واقع چینی قونصل خانے پر دہشت گردوں نے حملہ کیا تھا، جسے پولیس اور رینجرز نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے ناکام بنادیا تھا جبکہ تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی اپنی پستول کے ہمراہ دہشت گردوں سے مقابلہ کرنے کے لیے پہنچ گئے تھے۔