چینی قونصلیٹ حملے کے پیچھے ’را‘ کا ہاتھ ہے، انچارج سی ٹی ڈی راجہ عمر خطاب

کراچی: انچارج سی ٹی ڈی راجہ عمر خطاب نے کہا ہے کہ چینی قونصلیٹ حملے کی ذمہ داری کالعدم تنظیم نے قبول کی اور اس کے پیچھے ’را‘ کا ہاتھ ہے۔تفصیلات کے مطابق انچارج سی ٹی ڈی راجہ عمر خطاب نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ چینی قونصلیٹ حملے کی تحقیقات کررہے ہیں کہ دہشت گرد کہاں سے آئے تھے، تین حملہ آور تھے اور تینوں مارے گئے۔انچارج سی ٹی ڈی نے کہا کہ گاڑیاں ہینڈ گرینیڈ کی وجہ سے جلی ہیں، پہلے پوائنٹ پر ہمارے جوانوں پر ہینڈ گرینیڈ سے حملہ کیا گیا، دستی بم حملے کے باعث کوئٹہ کے رہائشی باپ بیٹا شہید ہوئے تھے۔راجہ عمر خطاب نے کہا کہ گرفتاری ہوئی ہیں لیکن ابھی تفصیلات نہیں بتاسکتے، ریکی کے بغیر یہ کام نہیں ہوسکتا ہے، دہشت گردوں سے ملنے والا سی فور مواد دیسی ساختہ نہیں ہوتا، جس نے دہشت گردوں سے کام کرایا ممکن ہے بارود اسی نے دیا ہو۔انہوں نے کہا کہ بی ایل اے گروپ کے کمانڈر اسلم عرف اچھو کی بھارت میں موجودگی کی تحقیقات کررہے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں