وزیراعظم نے منی لانڈرنگ کے خلاف سخت قانون سازی کا عندیہ دے دیا

لاہور: وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ روپےکی قدر میں کمی سے گھبرانےکی ضرورت نہیں، جلد منی لانڈرنگ کے خلاف سخت کارروائی کریں گے۔ان خیالات کا اظہار وزیراعظم نے لاہور چیمبر آف کامرس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ مشکل حالات سےنکلنے کے لئے بنیادی اقدامات کررہے ہیں۔وزیراعظم نے کہا کہ جاری کھاتوں کے خسارے کو کم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں، سعودی عرب، یو اے ای اور چین سے مثبت ردعمل ملا،  2013 میں جاری کھاتوں کا خسارہ ڈھائی ارب تھا، اوورسیز کو سہولیات دینے سےترسیلات زر10 ارب تک پہنچ سکتی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی جغرافیائی اہمیت ہے، لوگ سرمایہ کاری میں دلچسپی رکھتے ہیں، غیرملکی سرمایہ کاروں سے ملاقاتیں کیں اور انھیں سرمایہ کاری کی دعوت دی ہے۔وزیراعظم نے کہا کہ 27 سال بعد  تیل کی بڑی عالمی کمپنی ایگزون پاکستان آرہی ہے، ایگزون کمپنی پاکستان میں گیس کے بڑے ذخائر تلاش کرے گی، ان کا اندازہ ہے کہ پاکستان میں گیس کے بڑے ذخائر موجود ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں 10ارب ڈالر کی سالانہ منی لانڈرنگ ہوتی ہے، منی لانڈرنگ کے خلاف قانون لا رہے ہیں، زبردست کریک ڈاون کرنے والے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں