9 مئی کے واقعات کے کیس میں شیخ رشید کی ضمانت منظور

راولپنڈی(ڈیلی پاکستان آن لائن)راولپنڈی کی انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے سانحہ 9 مئی کیس میں عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد کی ضمانت منظور کرلی۔

سابق وزیر داخلہ شیخ رشید کی جانب سے سردار عبدالرزاق خان ایڈووکیٹ عدالت میں پیش ہوئے۔

رازق نے موقف اختیار کیا کہ راشد کا نام 5 اکتوبر کو وارث خان تھانے میں درج ایف آئی آر میں شامل کیا گیا تھا جبکہ ان کے موکل کا 9 مئی کے واقعات سے کوئی تعلق نہیں تھا۔

سماعت کے دوران رازق نے کہا کہ اے ایم ایل کے سربراہ رشید کے خلاف کوئی ثبوت موجود نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ راشد کا نام ایف آئی آر میں صرف بدنیتی کے تحت سیاسی طور پر نشانہ بنانے کے لئے شامل کیا گیا تھا۔

خصوصی جج اعجاز آصف نے ریمارکس دیے کہ شیخ رشید بزرگ شہری اور بزرگ شخص ہیں۔ عمر رسیدہ افراد کی عمر کو مدنظر رکھتے ہوئے عدالت نے انہیں 50 ہزار روپے کے ضمانتی مچلکے پر ضمانت دے دی جبکہ دوسرے فریق کو نوٹس بھی جاری کردیا۔

عدالت نے سابق رکن قومی اسمبلی شیخ رشید شفیق کی عبوری ضمانت کی درخواست 8 نومبر تک منظور کرلی۔ راشد شفیق کی جانب سے سردار عبدالرزاق ایڈووکیٹ نے دلائل دیئے۔